محمّد ذيشان
مغربی دنیا نے محض اپنی تحسینیات اور کمالیات کی خاطر دنیا کی ضروریات و حاجیات کوقربان کرنے کا وتیرہ اختیار کیا ہوا ہے ۔اس لیے وہ چاہتے ہیں کہ دنیا کی آبادی کنٹرول میں رہے اس میں کوئی ان کا مقابلہ کر نے والا نہ ہو ۔ کوئی انھیں compete کرنے والا نہ ہو۔ اور کسی ملک کی آبادی اس حد تک نہ جاۓ جو ان کے لیے خطرہ ہو سکے یہ امر واقعہ ہے۔
محمّد ذيشان
بہت سارے لوگ اس دنیا میں ایسےہیں جن کو کچھ سمجھ نہیں آرہا کہ وہ کیا کرے بچارے بہت زیادہ پریشان ہیں ان ساتھیوں کو سیدھا راستہ بتائیں اور ان کے دکھ درد میں شریک ہوں اور ان کے حوصلے بڑھائںیں کیا پتا کل کو وہ تناور درخت بن جائے اور آپ کی نسلوں کے کام آئے اور وہ آپ کودعائیں دیں کیونکہ نیکی کبھی ضائع نہیں ہوتی
محمّد ذيشان
•●◉✿ اقوال زرين ✿◉●•◦
۱)یہ دنیا آپ کی سوچ سے بالاتر ہے جب
آپ کبھی اپنے حالات کو اپنے مخالف پاتے ہیں تو آپ کو تنگ نظر بننے کی ضرورت نہیں ہے بس اپنے کام پر جمے رہو اور آگے بڑھتے رہو۔
۲)زندگی میں رسک لینا سیکھو آگے بڑھنے کے لئے۔
۳)جو تم ہمیشہ سے کرتے آئے ہو اگر وہی کرو گے تو تم کو وہی ملے گا جو ملتا آیا ہے۔
محمّد ذيشان
ایک مدت سے میری ماں نہیں سوئی اے تابش
میں نے ایک بار کہا تھا مجھے ڈر لگتا ہے
معاك
الجد في الجد
ویب سائٹ کا مضمون نگار کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں، اس سائٹ کے مضامین تجارتی مقاصد کے لئے نقل کرنا یا چھاپنا ممنوع ہے، البتہ غیر تجارتی مقاصد کے لیئے ویب سائٹ کا حوالہ دے کر نشر کرنے کی اجازت ہے.
ویب سائٹ میں شامل مواد کے حقوق Creative Commons license CC-BY-NC کے تحت محفوظ ہیں
شبکۃ المدارس الاسلامیۃ 2010 - 2022